HomeSPORTSبھارتی ٹیم کے پاس 10سے 12نئے فاسٹ بولرز آگئے ہیں، اگر یہ...

بھارتی ٹیم کے پاس 10سے 12نئے فاسٹ بولرز آگئے ہیں، اگر یہ لڑکا بھارت کی جگہ پاکستان میں ہوتا تو انٹرنیشنل کھیل چکا ہوتا۔۔ کامران اکمل


وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل کا کہنا ہے کہ عمران ملک پاکستان میں ہوتے تو اب تک انٹرنیشنل کرکٹ کھیل چکے ہوتے۔

اس تیز گیند باز، جس کا تعلق جموں اور کشمیر سے ہے، نے جاری انڈین پریمیئر لیگ میں اپنی تیز رفتاری سے سرخیوں میں جگہ بنائی ہے اور فی الحال جاری مقابلے میں اپنی فرنچائز کے لیے سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے دوسرے نمبر پر ہیں۔

اکمل، جو پاکستان سپر لیگ میں پشاور زلمی کی نمائندگی کرتے ہیں، اس حقیقت سے بھی متاثر ہوئے کہ بھارت اب پچھلے سالوں کے مقابلے میں بہت زیادہ تیز گیند باز پیدا کرنے میں کامیاب ہو گیا ہے۔

انہوں نے ایک انٹرویو میں کہا۔ اگر وہ پاکستان میں ہوتا تو شاید بین الاقوامی کرکٹ کھیل چکا ہوتا۔ اس کی اکانمی زیادہ ہے، لیکن وہ ایک اسٹرائیک باؤلر ہیں کیونکہ وہ وکٹیں حاصل کر رہے ہیں۔

“ہر میچ کے بعد، اس کا اسپیڈ چارٹ آتا ہے جہاں وہ 155 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے جا رہا ہے اور یہ کم نہیں ہے۔ ہندوستانی ٹیم میں یہ ایک اچھا مقابلہ ہے۔

“پہلے، ہندوستانی کرکٹ میں معیاری تیز گیند بازوں کی کمی تھی، لیکن اب ان کے پاس نودیپ سینی، (محمد) سراج، (محمد) شامی، اور (جسپریت) بمراہ جیسے تیز گیند بازوں کی بہتات ہے۔ یہاں تک کہ امیش یادو بھی خوبصورت گیند بازی کر رہے ہیں۔ صفوں میں 10-12 تیز گیند بازوں کے ساتھ، ہندوستانی سلیکٹرز کے لیے انتخاب کرنا مشکل ہوتا جا رہا ہے۔

اکمل نے میچورٹی دکھانے اور نوجوان تیز گیند باز عمران ملک کو پورا سیزن کھیلنے کی اجازت دینے پر ہندوستانی کرکٹ کی بھی تعریف کی۔

“پچھلے سیزن میں اس نے صرف ایک یا دو میچ کھیلے تھے۔ اگر وہ پاکستان میں ہوتا تو یقیناً ہمارے لیے کھیلتا۔ لیکن ہندوستانی کرکٹ نے عمران ملک کو آئی پی ایل کے پورے سیزن میں کھیلنے کا موقع دے کر کافی اچھا کیا۔

بریٹ لی اور شعیب (اختر) بھائی بھی مہنگے تھے رنز دیتے تھے، لیکن انہوں نے وکٹیں حاصل کیں اور اسٹرائیک باؤلرز کو ایسا ہی ہونا چاہیے۔

The post بھارتی ٹیم کے پاس 10سے 12نئے فاسٹ بولرز آگئے ہیں، اگر یہ لڑکا بھارت کی جگہ پاکستان میں ہوتا تو انٹرنیشنل کھیل چکا ہوتا۔۔ کامران اکمل appeared first on Cricketistan.



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

close